مرجع عالی قدر اقای سید علی حسینی سیستانی کے دفتر کی رسمی سائٹ

مرجع عاليقدر آيت الله سيستاني (دام ظله) كے دفتر كے ايك مسئول نے تصریح كيا ہے کہ:
گذشتہ شب معظم لہ كا باياں پير لغزش كها گيا جس كی وجہ سے آپ كے ران كي ہڈی ٹوٹ گئی ہے۔
انشاالله آج عراقی ڈاکٹروں کے ذريعہ آپ کا آپریشن ہوگا۔
مومنين سے معظم لہ کی شفایابی کے لیے دعا كی گزارش ہے۔

سوال و جواب » سجدہ

۱ سوال: سجدہ گاہ رکھنا کیوں ضروری ہے؟
جواب: نماز میں سجدہ زمین یا اس سے اگنے والی اشیاء پر ہونا چاہیے، کھانے اور پہننے والی اشیاء پر سجدہ کرنا صحیح نہیں ہے، آج کے دور میں چونکہ گھر، مساجد اور ہال وغیرہ میں قالین، فرش یا کارپٹ وغیرہ بچھے ہوتے ہیں جن پر سجدہ کرنا صحیح نہیں ہے، اس لیے خاک کی سجدہ گاہ سے استفادہ کرنا چاہیے اور چونکہ سجدے کی جگہ خاص طور پر پاک ہونی چاہیے اس شرط پر عمل کے لیے بھی سجدہ گاہ پر سجدہ کرنا سب سے آسان راستہ ہے، ہاں تربت کربلا پر سجدہ کرنا سب سے افضل ہے۔
۲ سوال: کیا ٹایلس اور معدنی پتھروں پر سجدہ کرنا صحیح ہے؟
جواب: ٹایلس پر ‎صحیح نہیں ہے لیکن معدنی پتھروں پر صحیح ہے۔
۳ سوال: کیسیٹ سے تلاوت سنتے وقت سجدہ والی آیت پڑھے جانے کی صورت میں کیا سجدہ واجب ہوگا؟
جواب: نہیں، اس صورت میں سجدہ واجب نہیں ہوگا، لیکن (live) آرہا ہو اور سنے تو سجدہ واجب ہے۔
۴ سوال: سر کے بال پیشانی اور سجدہ گاہ کے درمیان آ جائیں تو کیا اس صورت میں سجدہ صحیح ہوگا؟
جواب: اگر ذکر سجدہ کے بعد متوجہ ہو تو سجدہ صحیح ہے اور اگر ذکر سجدہ سے پہلے متوجہ ہو تو اگر ممکن ہو تو بال کو سجدے کی حالت میں پیشانی اٹھائے بغیر ہٹاۓ اور اگر ممکن نہ ہو تو سجدہ صحیح ہے۔
نیا سوال بھیجنے کے لیے یہاں کلیک کریں
العربية فارسی اردو English Azərbaycan Türkçe Français